Faisaliat- فیصلیات

رین لینڈر- ایک اچھا ڈیسکٹاپ کیلنڈر

Posted in Computing, urdu by Shah Faisal on فروری 26, 2008

صاحبو ہماری خوش قسمتی (یا المیہ) یہ ہے کہ ہم اطلاعات کے دور یا بہ زبانِ فرنگ، انفارمیشن ایج میں رہتے ہیں۔ ایسے میں کہ جب آپ پر ہر طرف سے انفارمیشن برس رہی ہو ، آخر کوئی انسان کتنی معلومات جھیل پاتا ہے؟ بیشمار ٹی وی چینلز، اخبارات، انٹرنیٹ، موبائل فون اور ایس ایم ایس، دوست، احباب اور رشتہ دار، بر لب سڑک اشتہارات، یہ سب وہ ذرائع ہیں جو ہماری معلومات میں اضافے کا باعث بنتے ہیں۔ میں کافی عرصے سے اس سوال کے جواب کی تلاش میں ہوں کہ ان تمام معلومات کو کسی ایک جگہ اکھٹا کرنے کا کوئی سہل، سبک رفتار اور قابلِ اعتبار طریقہ یا ذریعہ کیا ہو سکتا ہے؟ خیر اس پر پھر کبھی بات ہو گی۔ آج کا سوال تو یہ ہے کہ ان تمام معلومات نے جب ہماری زندگی کو انتہائی تیز رفتار بنا دیا ہے، آپ اپنی زندگی کو ترتیب دینے کیلئے کونسا طریقہ استعمال کرتے ہیں؟ یقیناً یہ زندگی تیز رفتار ہے، کافی تیزرفتار۔ اتنی کہ بسا اوقات اس سبک رفتاری کی وجہ سے زماں و مکاں سے ناتہ جوڑے رکھنا ہی حضرتِ انسان کیلئے مشکل ہو جاتا ہے۔ کیا آپ جدید ٹیکنالوجی کی مدد لیتے ہیں یا دیوار پر لٹکتا کیلنڈر، جیبی ڈائری اور کلائی پر بندھی گھڑی ہی آپکے کیلئے کافی ہے؟
آج ٹیکنالوجی یقیناً اس قابل ہو چکی ہے کہ آپکی تیزرفتار زندگی کو ترتیب دینے میں آپکی مدد کر سکے، گرچہ یہ ٹیکنالوجی سستی ہرگز نہیں۔ اگر آپ ایک اچھا پی ڈی اے موبائل فون یا سمارٹ فون لیتے ہیں تو اسکی قیمت شائد تیس ہزار سے لیکر اسی ہزار روپے یا اس سے بھی زیادہ ہو سکتی ہے۔ لیکن ایسے کسی فون سے جو آپکی جیب میں باآسانی سما سکتا ہے، آپ کافی مدد لے سکتے ہیں۔ وائس کال، ویڈیو کال، انٹرنیٹ کال، ایس ایم ایس، ایم ایم ایس، انٹرنیٹ براؤزنگ، ای میل وغیرہ جہاں آپکو دنیا سے رابطے میں رکھتے ہیں، وہیں آپ برقی دستاویزات یا الیکٹرانک ڈاکومنٹس پڑھنے یا لکھنے، برقی کتب یا اخبارات پڑھنے یا اپنی پسندیدہ فیڈز پڑھنے کا کام بھی اسی فون کی مدد سے کر سکتے ہیں۔ آپ ساکت یا متحرک تصاویر بنا اور محفوظ کر سکتے ہیں اور اپنا پسندیدہ موسیقی سن اور محفوظ کر سکتے ہیں۔ اس کےعلاوہ یہ فون آپکا کیلنڈر، گھڑی اور یاد دہندہ بھی ہے۔ آپ اس پر چھوٹے چھوٹے نوٹس لکھ یا بول کر محفوظ کر سکتے ہیں اور بیشمار دوسرے بھی کام کر سکتے ہیں جو بصورتِ دیگر سرانجام دینے کیلئے شائد آپ کو دفتر یا گھر جانا پڑے۔ بہرحال یہ نسخہ کافی مہنگا ہے اور ان لوگوں کیلئے ہے جنکا زیادہ وقت کاروباری سلسلے میں گھر یا دفتر سے باہر گزرتا ہے۔ اسکے برعکس اگر آپکے کام کی نوعیت ایسی نہیں اور آپکو دن کے بیشتر حصے میں گھر یا دفتر کے کمپیوٹر تک رسائی میسر ہے تو میرے پاس آپکی زندگی کو ترتیب دینے کا ایک حل موجود ہے اور وہ بھی بالکل مفت۔
نہیں نہیں ایسا نہیں کہ صرف یہی ایک حل ہے اپنے وقت کو گرفت میں رکھنے کا۔ کوئی بھی اچھا پرسنل انفارمیشن منیجر ایسا کرنے کا اہل ہوتا ہے۔ مثلاً مائکروسوفٹ کا ایم ایس آؤٹ لُک، آئی بی ایم کا لوٹس نوٹس یا لینکس استعمال کنندگان کیلئے نوویل کا ایوولوشن یا کے۔آرگنائزر وغیرہ سب اس قابل ہیں (ایک نیم مکمل فہرست آپ یہاں دیکھ سکتے ہیں)۔ لیکن ہو سکتا ہے کہ آپ توپ سے مکھی مارنے کی کوشش کر رہے ہوں یعنی یہ سب پروگرام یا اطلاقیے آپکی ضروریات سے کہیں زیادہ ہوں۔ قباحت یہ ہے کہ ایسے کسی بھی پروگرام کو ہر وقت چلائے رکھنے سے آپکا کمپیوٹر خاصا سُست رفتار ہو سکتا ہے اور یہ بھی کہ ان میں سے بیشتر پروگرام مفت نہیں خصوصاً اگر آپ ونڈوز نظام استعمال کرتے ہیں۔ ایسے میں ضرورت ہے کسی ایسے اطلاقیے کی جو صرف ایک اچھا کیلنڈر ہو، باآسانی نصب ہو سکتا ہو، استعمال میں بھی آسان ہو اور سب سے بڑھ کر یہ کہ مفت ہو۔ اگر ایسا ہے تو رین لینڈر بیشک ان سب شرائط پر پورا اترتا ہے۔
رین لینڈر کا نام دراصل کمو رینی پکولا (اس اطلاقیےکا مصنف یا موجد) کے نام کے ایک حصے یعنی "رین” اور لفظ "کیلنڈر ” کو ملا کر دیا گیا ہے۔یہ انٹرنیٹ سے مفت حاصل کیا جا سکتا ہے اور ونڈوز اور لینکس خدمتگار نظاموں (آپریٹنگ سسٹمز) کیلئے دستیاب ہے۔ یہ آپکے ڈیسکٹاپ پر موجود رہتا ہے اور یوں گاہے گاہے آپکی نظر اس پر پڑتی رہتی ہے۔ آپ اسکو کسی اہم دن مثلاً کوئی سالگرہ، میٹنگ، وغیرہ کی یاد دہانی کیلئے استعمال کر سکتے ہیں اور یہ مقررہ وقت پر آپکو الارم کے ذریعے خبردار بھی کر سکتا ہے۔ اسی طرح کسی ضروری کام کرنے کی یاد دہانی کیلئے بھی آپ اسکو استعمال کر سکتے ہیں۔ ایسے تمام کاموں کی فہرست یہ آپکی مرضی کے مطابق ترتیب دے کر دکھا سکتا ہے۔ مثلاً یہ کام کی اہمیت، شروع یا ختم ہونے کی تاریخ، موجودہ حالت یعنی مکمل یا دورانِ تکمیل، حروفِ تہجی کی ترتیب، وغیرہ کی حالت کے مطابق اس فہرست کو دکھا سکتا ہے۔
یہ ایک وقت میں ایک سے زیادہ کیلنڈر دکھا سکتا ہے (مثلاً دفتر، گھر، سالگرہ، وغیرہ وغیرہ کےلئے بنائے گئے آپکے علیحدہ علیحدہ کیلنڈر) اور آپ کچھ پیسے خرچ کر کے اسکو اس قابل بھی بنا سکتے ہیں کہ یہ انٹرنیٹ پر موجود آپکا گوگل کیلنڈر یا کوئی دوسرا کیلنڈر یا کمپیوٹر میں موجود آؤٹ لُک کا کیلنڈر بھی دکھا سکتا ہے۔
آپ اس میں کوئی بھی آئی کیلنڈر (جو آئی سی ایس فارمیٹ یا معیار پر بنایا گیا ہو)، درآمد /امپورٹ کر سکتے ہیں یا اسمیں موجود اپنے کیلنڈر کو کسی دوسرے پروگرام میں استعمال کیلئے برآمد/ ایکسپورٹ بھی کر سکتے ہیں۔ آپ اپنے کیلنڈر پرنٹ بھی کر سکتے ہیں اور انکا بیک اپ بھی لے سکتے ہیں۔ آپ اپنے کیلنڈر کو کھوج بھی سکتے ہیں اور یوں لمحوں میں کسی تاریخ کے اہم واقعات دیکھ سکتے ہیں۔
آپ اسکی شکل تبدیل کر سکتے ہیں اور اسکے لیے مختلف skins مفت حاصل کر سکتے ہیں بلکہ ان میں بھی اپنی مرضی کی تبدیلیاں بھی کر سکتے ہیں۔
جہاں تک بات ہے فدوی کی تو حضور میں تو اسے مختلف طریقوں سے استعمال کرتا ہوں۔ چونکہ میں اپنے کمپیوٹر پر مائکروسوفٹ ونڈوز اور ابنٹو لینکس دونوں استعمال کرتا ہوں اسلئے میں نے رین لینڈر دونوں نظاموں میں نصب کر رکھا ہے لیکن مزے کی بات یہ کہ کیلنڈر فائل یعنی وہ ڈیٹا فائل جس میں ساری معلومات ہوتی ہیں، ایک ہی ہے۔ اسطرح اس بات سے قطع نظر کہ میں کونسا نظام استعمال کر رہا ہوں، میرا کیلنڈر دونوں جگہ یکساں ہے اور ایک وقت میں کی گئی تبدیلیاں دونوں نظاموں میں موجود رین لینڈر کیلنڈر میں دکھائی دیتی ہیں۔اسکے علاوہ آزمائشی طور پر میں نے اسکو لینکس میں موجود ایوولوشن کا کیلنڈر استعمال کرنے کا کہا تو اس نے وہ بھی دکھا دیا، گرچہ میں اس میں رین لینڈر کے ذریعے تبدیلیاں نہیں کر سکتا یعنی یہ صرف read only ہی ہے۔ لیکن یہ بھی غنیمت ہے کیونکہ ونڈوز میں موجود آؤٹ لُک کا کیلنڈر دیکھنے کیلئے آپکو پیسے خرچ کرنا پڑتے ہیں۔ کہیے کیسی رہی؟
یہ کہنا تو شائد غیر ضروری ہی ہو کہ اس کے استعمال یا تنصیب میں درپیش کسی بھی مسئلے کے حل کے لیے آپ انٹرنیٹ پر موجود مددگار فورم استعمال کر سکتے ہیں جسمیں بسا اوقات خود اس پروگرام کا مصنف آپکو سوالات کے جوابات دیتا ہے۔ اور ہاں، شائد چھوٹے موٹے مسائل تو میں بھی حل کرہی لوں، آزمائش (میری نہیں، اس پروگرام کی)، شرط ہے!!!

Advertisements

3 Responses

Subscribe to comments with RSS.

  1. محمد شاکر عزیز said, on فروری 27, 2008 at 4:02 صبح

    شکر ہے ابھی ہم اتنے مصروف نہیں ہوئے کہ کیلنڈرز کے غلام بن جائیں۔ ویسے آئیڈیا واقعی اچھا ہے۔
    پی ڈی اے سے یاد آیا اسوس کا ای ای پی سی بھی خاصے کی چیز ہے۔ بیس ہزار کے اریب قریب قیمت میں ایک ننھا کمپیوٹر ہے جس میں پی سی کی تمام خصوصیات موجود ہیں۔

  2. Shah Faisal said, on فروری 27, 2008 at 6:58 شام

    شکریہ شاکر لیکن ایسس کا ای ای پی سی پی ڈی اے نہیں البتہ آپ اسے سب نوٹ بک کے زمرے میں لا سکتے ہیں۔ اچھی بات یہ ہے کہ حال ہی میں کئی سب نوٹ بکس مارکیٹ میں آئی ہیں جو نوٹ بک یعنی لیپ ٹاپ سے خاصی کم قیمت ہیں۔ اس پر بھی انشاء االلہ لکھونگا، بشرطِ زندگی۔

  3. zile huma said, on اپریل 4, 2008 at 7:04 صبح

    helo mr shah faisl aslamo alikum.main ny ap ki blogs read ki hain or mashALLAH mjhy apki approach bhot ache lge or ap ki tehkek k tu kia khny.main mazed b janana chahti hon or parhna bhe.but unfortunatly mjhy blog use krna ata he nai ye tu google py search k doraan mil gy ap plz is soört main mri madad kr skty hain.main kasy blog daikhon?reply kasy krty hain.aj ye reply ka bhe pory aik week baad pataa chala hai.ap plz mry email id py reply kr dana ho sky tu mjhy yahan pta nai chaly ga iska k ap ny reply kia bhe hai ya nai.
    Tc have nice time always.


جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s

%d bloggers like this: